26

مون سون کی بارش ’نعمت اتنی زحمت کے ساتھ کہ بندہ کدھر جائے‘

سندھ کے ساحلی شہر کراچی کے باسی سالہا سال بارش کی آس لگائے بیٹھے رہتے ہیں اورباران رحمت کے روٹھے رہنے کا شکوہ کرتے نظر آتے ہیں۔ لیکن اس بار قدرت کراچی والوں پر بھی مہربان ہوگئی اور مون سون بارشوں نے روشنیوں کے شہر کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا۔
مون سون کی پہلی بارش سے اہلِ کراچی کے جو چہرے خوشی سے کھِل اٹھے تھے،سڑکوں پر نکاسی آب کی ناقص صورتحال کی وجہ سے مرجھا گئے۔
پیر کی صبح سے بارش کا سلسلہ جاری ہے جو وقتاً فوقتاً تیز ہوجاتا ہے، جس سے صورتحال مزید بگڑنے کا اندیشہ ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق کراچی میں پیر اور منگل کو گرج چمک کے ساتھ موسلادھار بارش کا امکان ہے۔
نکاسی آب کا مناسب انتظام نہ ہونے کی وجہ سے شہر میں سڑکوں پہ پانی جمع ہونے کی وجہ سے لوگوں کو آمد و رفت میں دقت کا سامنا ہے۔ سڑکوں پہ گاڑیوں کی لمبی قطاریں اور ٹریفک جام دیکھنے میں آرہا ہے۔ بارش ہوتے ہی شہر کے مختلف علاقوں میں بجلی بھی غائب ہو گئی۔
اس صورتحال نے کراچی والوں کو عجیب مخمصے میں ڈال رکھا ہے، کچھ کے لیے یہ بارش نعمت تو کچھ کے لیے زحمت بنی ہوئی ہے۔ سوشل میڈیا پر بھی صارفین مزاحیہ میمز شیئر کرکے اپنے خیالات کا اظہار کررہے ہیں
ٹوئٹر ہینڈل ’فے الف‘ نے لکھا کہ صبح سے بجلی نہیں ہیں سڑکوں پر پانی کھڑا ہے اس صورت حال میں میں یہ سوچنا بھی نہیں چاہتی کہ جھونپڑیوں میں رہنے والے اس موسم کا کیسے مقابلہ کر رہے ہوں گے۔ نعمت بھی اتنی زحمت کے ساتھ، بندہ کدھر جائے ابھی تو تیز بارش کی شروعات کا پہلا دن ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں